بھارت کے یوم جمہوریہ پر برسلزکے تفریحی اور تاریخی مقام آٹومیم پر ای یو پاک فرینڈشپ فیڈریشن یورپ کی جانب سے پہلی بار بہت بڑی کار ریلی کا انعقاد کیا گیا،  چھوٹی بڑی گاڑیوں پر بھارت مخالف پوسٹر آویزاں کیئے گئے جن پر بھارت میں اقلیتوں پر جاری مظالم اور پاکستانی کنٹرول لائن پر بلا اشتعال فائرنگ ملک میں  بھارتی در اندازی کو آشکار کیا گیا،  کشمیریوں کی حمایت میں اور بھارت محالف نعرے بلند کیئے گئے۔
برسلز(ڈیلی پیغام) بلجیم میں پہلی بار ای یو پاک فرینڈشپ فیڈریشن یورپ کی جانب سے بھارت کے یوم جمہوریہ پر بہت بڑی کار ریلی کا انعقاد کیا گیا جس کی قیادت فیڈریشن کے چیئرمین چوہدری پرویز اقبال لوہسر، وائس چیئرمین چوہدری محمد ناصر،  یوتھ ونگ کے صدر علی چوہدری،  بلجیم کے صدر شاہد فاروقی، سرپرست بلجیم چوہدری منیر لوہسر اور دیگر اراکین نےکی۔  برسلز کے علاوہ بلجیم کے دوسرے شہروں سے پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی نے بھرپور شرکت کی۔  گاڑیوں پر پوسٹر آویزاں کیئے گئے جن پر فری ناگا لینڈ، فری آسام، فری خالصتان ، ا اناف انڈیا، سٹاب پیلٹ گنز ان کشمیر اور انڈیا سٹاپ سٹیٹ ٹیررزم ان کشمیر جیسی تحریریں درج تھیں۔ شرکا نے یورپی یونین، اقوام متحدہ اور دیگر عالمی طاقتوں سے مطالبہ کیا کہ  مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم کو رکوانے کیلئے دباؤ ڈالا جائے۔  ریلی دنیا بھر سے آئے سیاحوں کی توجہ کا مرکز بنی رہی۔  ہیومین ایکٹیوسٹ مسٹراینڈی نے اپنے خطاب میں بھارت سے  کشمیر کشمیریوں کو واپس دینے کا مطالبہ کر دیا۔ چیئرمین ای یو پاک فرینڈشپ فیڈریشن یورپ چوہدری پرویز اقبال لوہسر اور دیگر نے میڈیا  سے بات کرتے ہوئے  ریلی نکالنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ یہ ریلی سویزر لینڈ اور دیگر ممالک میں بلوچستان کے متعلق پروپیگنڈہ کا جواب ہے۔ ریلی کے  شرکا نے اس بات کا عزم کیا کہ بین القوامی سطح پر بھارت کا اصل چہرہ  دیکھانے کیلئےاسطرح  کی کار ریلیاں یورپ کے دوسرے ممالک میں بھی نکالی جائینگی۔ اس ریلی کے انعقاد میں  شیخ شکیل، شکیل گوہر، امین الحق، خرم بٹ، عامر بٹ، تنویر بھٹی، میاں شعیب، انعام اللہ بٹ، مہر ذوالفقار، کشمیری رہنما سردار ساجد، حافظ فہیم،  شٰخ کاشف، انعام اللہ بھٹی، بشارت چوہان، شیخ ماجد، معروف تاجر نعیم ڈار  اور دیگر نے اہم کردار ادا کیا۔

Please follow and like us: