کفر کی قوتیں انتخابی عمل سبوتاژ کرکے عوام میں فوج کیخلاف نفرت کی آگ بھڑکانا چاہتی ہیں
پاکستان اپنوں کی غداری اورغیروں کی ہوشیاری کی وجہ سے بدترین خطرات میں گھر چکا ہے

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) نیشنل کا ¶نٹر ٹیررازم اتھارٹی(نیکٹا ) کے سربراہ ڈاکٹر سلیمان کی جانب سے سیاسی قیادتوں پر حملے کے خدشات کے انکشاف کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے نگراں حکومت اور قومی اداروں کو سنجیدہ ‘ مو ¿ثر اور فول پروف اقدامات کرنے چاہئیں کیونکہ قرائن بتارہے ہیں کہ پاکستان دشمن قوتیں سیاسی قیادت ‘ فوج اور عوام کے درمیان نفرتیں پیدا کرنے کیلئے پاکستان میں انتخابی عمل کو سبوتاژ کرنا چاہتی ہے جس کا ثبوت پشاور میں ہارون بلور کی اور مستونگ میں سراج رئیسانی کی خود کش حملے میں ہلاکت ہے جبکہ نیکٹا کی جانب سے یہ بھی بتایا گیا ہے کہ تحریک طالبان ‘ جماعت الاحرار اور داعش کی جانب سے مخصوص سیاسی جماعتوں اور قیادتوں کو نشانہ بنائے جانے کا امکان موجود ہے ۔ گجراتی قومی موومنٹ کے سربراہ گجراتی سرکار عرفان پٹی والا نے قومی اداروں اور نگراں حکومت سے انتخابات کو شفاف و غیر جانبدارانہ کیساتھ محفوظ و پر امن بنانے کیلئے موثر حکمت عملی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اپنوں کی غداری اور غیروں کی ہوشیاری کے باعث انتہائی دگرگوں حالات اور بدترین خطرات سے گزررہا ہے ان حالات میںنوازشریف ‘ عمران خان ‘ بلاول بھٹو ‘ شیخ رشید ‘ چوہدری نثارجیسے سیاستدانوں کی سیکورٹی فول پروف بنانے کی ضرورت ہے کیونکہ دہشتگرد ان میں سے کسی کو بھی نقصان پہنچا تو پاکستان کا مستقبل خطرے سے دوچار ہوجائے گا جبکہ انتخابی عمل کے دوران تمام امیدواروں ‘ ووٹرز اور عوام کو بھی مکمل تحفظ فراہم کیا جائے کیونکہ کفر کی قوتیں ہر حال میں انتخابی عمل سبوتاژ کرکے جمہوری تسلسل کو نقصان پہنچانے اور فوج و عوام کے درمیان نفرتوں کی آگ بھڑکانے کی کوشش کرینگی جس پر ان کے آلہ کار پٹرول چھڑک کر اس آگ میں پاکستان کو بھسم کرنے کیلئے تیار بیٹھے ہیں اسلئے دہشتگردوں کے مذموم ارادوں کو ناکام بنانے کیلئے بہترین و مثالی سیکورٹی اقدامات کئے جائیں !

Please follow and like us: