جنیوا(ڈیلی پیغام) اقوام متحدہ انسانی حقوق کونسل کے چالیسویں سیشن میں شریک کشمیری وفد کی جانب سے بھارتی مظالم کے حوالے سے تصویری نمائش لگائی گئی۔ ہر مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد اور انسانی حقوق کے کارکنوں نے نمائش میں بہت دلچسپی لی۔ اس نمائش میں تمام تصاویریں  بین الاقوامی اخباروں کے فوٹو جرنلسٹوں کی لی ہوئیں تھیں اس نمائش کا افتتاح سابق سینیٹر وزیر آزاد حکومت ریاست جموں کشمیر چوہدری پرویز اشرف نے کیا اور میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ تصاویر اس بات کی غمازی کر رہی ہیں کی مقبوضہ کشمیر کے اندر بھارتی جارحیت وسیع پیمانے پر ہو رہی ہے۔
  
ایگزیکیٹو ڈائریکٹر یوتھ فورم فار کشمیر مسٹر احمد قریشی نے کہا کہ یہ تصاویریں مستند اور تصدیق شدہ ہیں اور تاریخ اور تفصیل کے ساتھ پیش کی گئیں ہیں۔ احمد قریشی کا مزید کہنا تھا کہ یہ نمائش بھارتی حکومت کے ان دعوؤں کا جواب ہے کہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے بارے میں جو تصاویر دکھائی جاتی ہیں وہ دراصل یہاں کی نہیں بلکہ شام لیبیا اور دیگر جنگ زدہ علاقوں کی ہیں۔

 نمائش کے منتظمین جن میں  کشمیری رہنما  حسن بنا، سید فیض نقشبندی، الطاف حسین وانی،  سردار امجد یوسف،  ایڈووکیٹ پرویز احمد شاہ، خصوصاََ احمد قریشی نے کہا کہ نمائش میں رکھی گئی تمام تصاویرپر تاریخ و تفصیل، فوٹو جرنلسٹ کا نام، تصویر میں دکھائے گئے لوگوں کے نام اور جس اخبار نے تصویر شائع کی ہے اس کا نام  موجود ہے۔ انھیں کوئی چیلنج نہیں کر سکتا۔  جموں و کشمیر فورم فرانس کے چیرمین نعیم چوہدری، نوجوان  تاجر فرانس ساجد مرزا، ماجد خواجہ، علی حسن چاندی، نوجوان کشمیری رہنما حسن اشرف نے خصوصی شرکت کی۔
Please follow and like us: