برسلز(پ ر) پاکستان پریس کلب برسلز کے انتخابات گذشتہ روز منعقد ہوۓ۔صدر شاہد فاروقی اور سیکرٹری جنرل عظیم ڈار اکثریتی راۓ سے منتخب ہوۓ ۔تفصیل کے مطابق پاکستان پریس کلب کی سابقہ باڈی کو معطل کرتے ہوۓ نئے عہدیداران کا انتخاب جمہوری طریقے کے ذریعے عمل میں لایا گیا۔ سنئیر نائب صدر اختر سیالوی نائب صدور معین شیخ۔ شمعون چوہان جوائنٹ سیکرٹری ملک مغیث فنانس سیکرٹری مرزا عمران بیگ اور پریس سیکرٹری مذمل مان اکثریتی راۓ کے ساتھ منتخب ہوۓ۔اس موقع پر نومنتخب عہدیداران نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستان پریس کلب اپنی روایات کو زندہ رکھتے ہوۓ نہ صرف پاکستان کے قومی تہواروں کو شان وشوکت سے منائیں گے بلکہ کمیونٹی کے مسائل کو اجاگر کرنے اور ان مسائل کےتدارک کے لیے بھی اپنی کاوشیں جاری رکھیں گے۔اس موقع پر پاکستان پریس کلب برسلز کے صدر شاہد فاروقی نے کہا کہ پاکستان پریس کلب برسلز کی بنیاد پاکستان کی سالمیت اسکے تشخص کو اجاگرکرنے اور کمیونٹی میں یکجہتی بھائی چارہ اور یگانگت پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ ملک کی تہذیب وتمدن کو نئی نسل سے متعارف کروانے میں نمایاں کردار ادا کرنا ہے۔سیکرٹری جنرل عظیم ڈار نے کہا کہ ہمیں مل جل کر کمیونٹی کو متحد کرنے اور اختلافات اور دھڑے بندیوں کی سیاست کو ختم کرنے کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھنی چاہیئے۔نائب صدور معین شیخ اور شمعون چوہان نے کہا کہ پاکستان پریس کلب برسلز کے انتخابات کو خوش آئند اقدام سمجھتےہیں ۔انھوں نے کہا کہ سابقہ صدر عمران بیگ اور دیگر ممبران کی کاوشیں ہمیشہ مثبت سمت میں سفر کرتے ہوۓ یہاں تک پہنچی ہیں کہ ہم آج بھی پاکستان کے روشن مستقبل کی خاطر اکھٹے ہیں۔ سنئیر نائب صدر اختر سیالوی جوائنٹ سیکرٹری ملک مغیث نے نومنتخب باڈی کی تشکیل پر خوشی کا اظہار کرتے ہوۓ نومنتخب ممبران کو مبارکباد دی۔اور نیک خواہشات کا اظہار کیا پریس سیکرٹری مذمل مان نے کہا کہ ہم پریس کے ذریعے پاکستان کا مثبت چہرہ اجاگر کرنے کے ساتھ نئی اور پرانی نسل کے درمیان گیپ کو کم کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔فنانس سیکرٹری مرزا عمران بیگ نے کہا کہ ہمیں مثبت کاموں کے ذریعے مثال پیدا کرنی چاہیئے۔انھوں نے اس عزم کا بھی اظہار کیا کہ ہمیں بین الاقوامی سطع پر پاکستان کا سافٹ امیج پیش کرنے کے لیے مثبت صحافت کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔یاد رہے پاکستان پریس کلب برسلز کی باڈی کو دوسال کے لیے منتخب کیا گیا ہے۔جبکہ نئے ممبران کو پریس کلب میں شامل کرنے کے لیے لائحہ عمل کو یقینی بنایا گیا۔ پریس کلب کے ممبران نے زرد صحافت سے اجتناب کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔اجلاس میں صحافی برادری پر ظلم وستم اور جبر استبداد کرنے اور انہیں قتل کرنے جیسی تشویشناک صورتحال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوۓ شر پسند عناصر کے خلاف آواز بلند کرنےکا عزم کیاگیا۔اور صحافی برادری کے استحصال کی روک تھام کے لیے پاکستان پریس کلب برسلز ہمیشہ آواز بلند کرتا رہے گا۔

Please follow and like us: