محنت اور اپنے مقصد کے ساتھ لگن ہو تو کامیابی یقینی ہوتی ہے
کامیابی کی ایک داستان ظہیر اقبال آف راولپنڈی سے ملاقات


برسلز ( مرزا عمران بیگ) ظہیر اقبال کا تعلق راولپنڈی سے ہے اور گزشتہ بیس سالوں سے بلجیم کے خوبصورت اور اہم شہر برسلز میں مقیم ہیں آپ کا تعلق راولپنڈی سے ہے آپ 1997 ء میں پاکستان سے یورپ آئے اوربلجیم میں کام کرنے لگے آپ کے دو بھائی سائوتھ افریقہ مقیم ہیں اور اپنا کاروبار کر رہے ہیں ایک بھائی پاکستا ن میں ہے جو والدین کی خدمت اور گھر کے معاملات کی دیکھ بھال کرتے ہیں ظہیر اقبال نے اپنی کامیابیوں کے حولے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میری کامیابیوں کے پیچھے میری ماں کی دعا ئیں ہیں آج میں جو کچھ بھی ہوںاس کے لئے اللہ پاک کے بعد اپنی ماں کا شکر گزار اور احسان مند ہوں ۔

آج اللہ کے فضل سے ہم تین بھائی ملک سے باہر ہیں اور سب سیٹ ہیں اور پاکستان میں بھی اپنے والدین کی سرپرستی میں خوشحال زندگی گزار رہے ہیں میں نے برسلز میں ہی شادی کی ہے اور میرے دو بچے ہیں اللہ کے فضل سے میں بڑی خوش وخرم زندگی گزار رہا ہوں۔ اپنی کامیابی میں ایک اور شخصیت کا ذکر کرنا بہت ضروری ہے اور وہ ہیں سٹی کونسلر اور معروف بزنس مین چوہدری محمد ناصر آپ نے قدم قدم پر میری رہنمائی کی اور حوصلہ بڑہایا


پاکستان میں رہنے والوں سے ایک بات ضرور کہنی ہے کہ ہمارا پیارا وطن دنیا کا خوبصورت ترین ملک ہے اور بے شمار وسائل سے مالامال ہے پاکستان کی قدر کریں اور پاکستان سے رہنے والوں سے میری گزارش ہے کہ ہم تارکین وطن ملک سے باہر ملک کے غیر سرکاری سفیر ہیں اور آپ کوئی ایسا کام نہ کریں جس سے پاکستان کی بدنامی ہو پاکستان کے موجودہ حالات کے بارے میں ظہیر اقبال نے کہا کہ عمران خان اچھا کام کر رہا ہے اسے موقع ملنا چاہئے اپوزیشن منفی ہتھکنڈوں کو ا ستعمال نہ کرے ۔

Please follow and like us:
error