برمنگھم(پ ر) تحریک کشمیر یورپ نے آج 6 نومبر1947کے شہیدا جموں کو زبردست خراج تحسین پیش کرنے کے لیے یورپ کے مختلف ممالک میں یوم شہیدا جموں منانے کا اعلان کیا ہے ہے شہیدا کے لیے خصوصی دعائوں کا اہتمام کیا جائے گا مقبوضہ جموں کے مسلمانوں کی قربانیوں کو اجگر کیا جائے گا مقبوضہ کشمیر کے موجودہ حالات پر روشنی ڈالی جائے گی اور دنیا کی توجہ کشمیر کے حالات پر مبذول کرائی جائے گی کہ 72سال سے کشمیر اپنے جمہوری اور پیدائشی حق حق خوداردیت کے قربانیاں دے رہے ہیں ان کے ساتھ کیے گے وعدے اور معائوں پر عمل درآمد کیا جائے۔ تحریک کشمیر یورپ کے صدر محمد غالب، جنرل سکریٹری انصر منظور حسین ، سنیئر نائب صدر محمود شریف، نائب صدر ریاض بٹ، نائب صدر میاں محمد طیب اور ڈپٹی جنرل سکریٹری فریدالدین لودھی نے کہا کہ بھارت کی درندہ صفت فوج نے تین لاکھ سے زیادہ مسلمانوں کا جموں میں قتل عام کیا بھارت نے یہ سلسلہ جارہی رکھا ہوا بھارت کی دہشتگردی سے گذشتہ تیس سالوں میں مذید ایک لاکھ کشمیر ی بھارت کی دہشتگردی کا نشانہ بن چکے ہیں بھارت خطے کے امن کو برباد کرنے کے لیے جو حربے اور ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے اس سے خطے میں کسی بھی وقت جنگ شروع ہوسکتی ہے اور اس کے نتائج انتہائی خطرناک ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں تین ماہ سے مسلسل کرفیو ہے دنیا مسلسل خاموش تماشائی ہے اس سے کشیدگی میں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے کشمیریوں کا قتل عام نسل کشی جارہی جان و مال عزتیں پامال ہورہی ہیں اور نہتے کشمیری عوام بھارت کے بے تہاشہ ظلم اور بربریت کے باوجود بھارت کے خلاف ڈٹے ہوئے ہیں آزادی کے سوا کوئی حل قبول کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں بھارت اور دنیا کے لیے بڑا واضع پیغام ہے کہ مسلہ کشمیر کے پُرامن دیر پا حل پر توجہ دی جائے۔

Please follow and like us: