برسلز (مرزا عمران بیگ) برسلز کی نامور سماجی,کاروباری شخصیت چوہدری مظہر حسین کا تعلق پاکستان کے ضلع فیصل آباد سے ہے اور آپ ایک عرصے سے برسلز میں اپنا کاروبار کر رہے ہیں پاکستان کے وقار اور بہتر امیج کے لئے دن رات کوشاں ہیں پاکستانیت کے فروغ کے لئے کام کرنے والی آرگنائزیشن ای یو پاک فرینڈشپ فیڈریشن یورپ کے صدر ہیں انسانی خدمت اور ضروت مندو ں کے کام آنے کا جذبہ ورثے میں ملا ہے قومی درد دل رکھنے والے چوہدری مظہر حسین پاکستان کے تعلیم اور صحت کے شعبوں کی بہتری کے لئے گراں قدر کام کر رہے ہیں اور اس سلسلہ میں اپنے والد گرامی کے نام پر طفیل ویلفیئرسوسائٹی بنائی ہے جس کے چیئرمین ہیں اور یہ سوسائٹی تحصیل سمندری کے پسماندہ علاقے میں بلا تفریق کام کر رہی ہے چوہدری مظہر حسین نے ایک انٹرویو میں کہا کہ پاکستان کو اللہ پاک نے بے شمار وسائل سے نوازا ہے مگر حکومتوں کی نااہلی کی وجہ سے ملک قرضوں کی دلدل میں الجھتا گیا اور عوام مشکلات کا شکار ہو گئے موجودہ حکومت کی بہتر پالیسیوں کی وجہ سے عالمی سطح پر پاکستان کی ساکھ اور وقار میں اضافہ ہوا ہے عالمی میڈیا پاکستان کو اس سال کے لئے بہترین سیاحتی ملک قرار دے چکا ہے ملٹی نیشنل کمپنیاں پاکستان میں بڑھ چڑھ کر سرمایہ کاری کر رہی ہیں گوادر پورٹ اورسی پیک ایسے منصوبے ہیں جو ملک کو بہت آگے لے جائیں گے پاکستان اور گرے لسٹ کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں چوہدری مظہر حسین نے کہا کہ اس سلسلہ میں حکومت کے ساتھ ساتھ پاکستانی بزنس کیمیونٹی اور تاجر تنظیمیں بھی اہم کردار کی حامل ہیں مودی حکومت کے اگست کے اقدام کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت جو مرضی کر لے کشمیر کے مسئلے کا حل اقوام متحدہ کی قرادادوں کے مطابق کشمیریوں کے حق خود ارادیت سے ہی ممکن ہے مودی حکومت کے ان ظالمانہ اقدامات کی وجہ سے بھارت کی کئی اور ریاستوں میں بھی علیحدگی کی تحریکیں زور پکڑ رہی ہیں اور خاص طور پر خالصتان کی تحریک اہم موڑ میں داخل ہو چکی ہے اپنی سماجی خدمات کے حوالے سے ایک سوال کے حوالے سے چیئر مین طفیل ویلفیئر سوسائٹی چوہدری مظہر حسین نے کہا کہ ہماری تنظیم ہائر ایجوکیشن کے لئے کام کرتی ہے اس وقت کئی ایک طلبہ و طالبات کو اعلی تعلیم کے لئے مکمل مالی معاونت فراہم کی جارہی ہے صحت کے شعبہ میں بھی ضروت مندوں کے علاج معالجہ کے لئے مالی مدد کر رہے ہیں اوور سیز پاکستانیوں کے لئے ایک پیغام میں چوہدری مظہر حسین نے کہا کہ ہم سب پاکستان سے باہر پاکستان کے غیر سرکاری سفیر ہیں ہمیں پاکستان کی عزت و وقار کو ہمیشہ سامنے رکھنا چاہئے اور کوئی ایسا کام نہ کریں جس سے ہمارے ملک کی بدنامی ہو کیو ں کہ پاکستان ہے تو ہم ہیں آپس کے اختلافات کو پس پشت ڈال کرصرف اور صرف پاکستان کے مفاد اور وقار کو مدنظر رکھیں

Please follow and like us: